عمران خان، وزیراعظم پاکستان 89

” صرف عمران خان ہی نہیں 160 مائنس ہوں گے“

سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ حکومت کی مدت پوری ہونے پر مکمل یقین رکھتے ہیں، مائنس ایک یا دو نہیں پورا 160 ہوگا۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ جس نےکبھی ٹیکس نہیں دیا وہ بڑے بڑے عہدوں پر بیٹھے ہیں، جو ملک کے لئے کام کرتے ہیں وہ عدالت میں آرہے ہیں، یعقوب ستار پرانے اور قابل افسر ہیں انھیں بھی ملزم بنا دیا۔

انہوں نے کہا کہ حکومت ناکام ہوچکی ہے عمران خان کو گھر جانا ہوگا، ہم جمہوریت کو ڈی ریل نہیں دیں گے، اس حکومت کا ،عمران خان کا ایک لمحہ بھی بھاری ہے۔

سابق ویر اعظم نے کہا کہ پیٹرول کاجو بحران رہا اس پر کوئی پوچھنے والا نہیں ، کرپشن کا الزام نہیں لگتا مگر لوگوں نے اربوں روپے کا فائدہ حاصل کیا، ہم کسی غیر جمہوری قوت کو نہیں آنے دیں گے۔

سابق ویر اعظم نے کہا کہ میڈیا کی آزادی پر اس حکومت نے جیسے حملہ کیا کسی نے نہیں کیا، نجی چینل کو پہلے نوٹس دینا چاہیے تھا۔

انہوں نے سوال کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے پانچ سال آپ کے سامنے ہیں،کسی چینل یا کسی اینکر کے خلاف کوئی کارروائی ہوئی
شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ہم حصول اقدار کے لیے نہیں کام کرتے، 2013 میں حالات دیکھے تھے تمام بحران حل کئے ہیں، نظام بہتر کرنے کا فیصلہ کرنے تک الیکشن کا کوئی فائدہ نہیں۔

اس سے قبل سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی احتساب عدالت پہنچے تھے، شاہد خاقان عباسی آج پہلی مرتبہ احتساب عدالت میں پیش ہوئے۔

ذرائع کے مطابق شاہد خاقان عباسی و دیگر کے خلاف ایم ڈی پی او ایس او کی تعیناتی کا ریفرنس دائر کیا گیا تھا۔

عدالت نے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو ریفرنس کی نقول فراہم کردیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں