ڈاکٹر ھذال بن حمود العتیبی، صدر بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی، اسلام آباد 97

بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی اسلام آباد کے نئے صدر کون ہیں؟

سعودی عرب سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر ھذال بن حمود العتیبی کو بین الاقومی اسلامی یونیورسٹی، اسلام آباد کا نیا صدر مقرر کردیا گیا ہے۔ انھوں نے ڈاکٹر یوسف الدراویش کی جگہ یہ منصب سنبھالا ہے، ڈاکٹر یوسف کا تعلق بھی سعودی عرب سے تھا۔

بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی، اسلام آباد کے بورڈ آف ٹرسٹیز کا ایک غیر معمولی اجلاس ایوان صدر میں ہوا جس میں ڈاکٹر ھذال بن حمود العتیبی کی بطور صدر اسلامی یونیورسٹی تقرری کی منظوری دی گئی ۔ اجلاس کی صدارت صدر مملکت اسلامی جمہوریہ پاکستان و چانسلر بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی ، اسلام آباد جناب ڈاکٹر عارف علوی نے کی۔

ڈاکٹر ہذال کا تعلق سعودی عرب سے ہے اور وہ معروف ماہر نفسیات ہیں، انہوں نے اسی شعبہ میں سپین کی میڈرڈ یونیورسٹی سے پی ایچ ڈی کی ڈگری جبکہ امریکا سے پوسٹ ڈاکٹریٹ کی ڈگری بھی حاصل کر رکھی ہے۔ وہ سعودی عرب کی تنظیم برائے تعلیم و نفسیات کے رکن ہیں۔ ڈاکٹر ہذال سپین میں نفسیاتی ماہرین کی تنظیم کے بھی رکن ہیں۔

ڈاکٹر ہذال امام محمد ابن سعود یونیورسٹی میں ڈین کی حیثیت سے خدمات کا تجربہ رکھتے ہیں جبکہ وہ اسی جامعہ میں بطور چیئرمیں شعبہ نفسیات بھی خدمات سرانجام دے چکے ہیں۔ ڈاکٹر ہذال سعودی عرب کے وزارت اعلیٰ تعلیم کے خصوصی سکالر شپ پروگرام کے مستقل ایڈوائزر بھی رہ چکے ہیں ، یادرہے کہ اس پروگرام کو خادمین حرمین شریفین کی طرف سے تشکیل دیا گیا ہے ۔

اس کے ساتھ ہی ساتھ ڈاکٹر ہذال نصاب کی تشکیل کی قومی کمیٹیوں سمیت تعلیم و تربیت سے متعلقہ دیگر فورمز کے بھی رکن رہے ہیں۔

بورڈ آف ٹرسٹیز کے اس غیر معمولی اجلاس میں بین الاقوامی اسلام ریکٹر ڈاکٹر معصوم یٰسین زئی نے رپورٹ پیش کی جس پر شرکاء نے اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے اسلامی یونیورسٹی کی کامیابیوں کو سراہا۔

اس اجلاس میں صدر مملکت سمیت پاکستان او ر مسلم دنیا کی اہم شخصیات نے شرکت کی جن میں جامعہ کے نو تعینات پروچانسلر پروفیسر احمد سلیم محمد الامیری، چیف جسٹس وفاقی شرعی عدالت ، ریکٹر اسلامی یونیورسٹی ڈاکٹڑ معصوم یٰسین زئی ، سیکرٹری فنانس ، سیکرٹری صدر مملکت ، چیئرمین ہائر ایجوکیشن کمیشن، چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل ، چیئرمین سی ڈی اے، قائمقام صدر جامعہ ڈاکٹر اقدس نوید ملک ، نائب صدر جامعہ ڈاکٹر نبی بخش جمانی، اسلامی تعاون کی تنظیم کے سیکرٹری جنرل ، اسلامی ترقیاتی بنک کے سربراہ ، تعلیم و تحقیق کے ادارے آئی سسکو (ISESCO) کے سربراہ ، شیخ الازہر ، مکہ کی ام القریٰ یونیورسٹی کے ریکٹر، ریکٹر قاہرہ یونیورسٹی ، ریکٹر الازہر یونیورسٹی ، صدر اسلامی یونیورسٹی مدینہ، ور صدر اسلامی یونیورسٹی غزہ شامل ہیں۔

واضح رہے کہ بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی پاکستان کی واحد جامعہ ہے جس کے بورڈ آف ٹرسٹیز میں پاکستان اور عالم اسلامی سے اس قدر بڑ پیمانے پر اور اتنی اعلیٰ سطح پر نمائندگی ہوتی ہے۔

واضح رہے کہ کورونا وبا کی وجہ سے بورڈ کے غیر ملکی ارکان نے آن لائن شرکت کی ۔

بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی ، اسلام آباد اپنے معیار اور دیگر شعبوں کے اعتبار ایشیا کی بہترین یونیورسٹیوں میں سے ایک ہے۔ اسی لئے اس کے صدر کا انتخاب بھی غیرمعمولی انداز میں ہوتا ہے۔ تقرری کے اسی انداز کا اثر ہے کہ یونیورسٹی کئی شعبوں میں ایشیا کی بہترین یونیورسٹیوں میں شامل ہے جبکہ پاکستان میں رینکنگ میں اولین نمبرز پر ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں